User Rating:  / 1
PoorBest 

پوری مینگنی گرنے سے پانی پاک اور آدھی گرنے سے نجس...!

 

صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین کو غیر فقیہ کہنے والے احناف کی فقاہت دیکھیے مینگنی اگر پوری ہو  خواہ نرم ہو یاسخت , سوراخ دار ہو یا صحیح وسالم, تازی ہو پرانی  , بہر حال وہ کنویں کے پانی کو نجس نہیں کرتی , البتہ آدھی مینگنی پانی کو نجس کر دیتی ہے  ۔

ع ......... اس "فقاہت" پہ کون مر نہ جائے اے خدا ...!

ملاحظہ فرمائیں  کہ ابن نجیم حنفی اپنی کتاب الأشباہ والنظائر میں رقمطراز ہیں :

الْبَعْرَةُ إنْ سَقَطَتْ فِي الْبِئْرِ لَا تُنَجِّسُ الْمَاءَ وَنِصْفُهَا يُنَجِّسُهُ

پوری مینگنی اگر کنویں میں گر جائے تو وہ پانی کو نجس نہیں کرتی , اور آدھی ہو تو وہ نجس کر دیتی ہے۔

 

الْأَشْبَاهُ وَالنَّظَائِرُ عَلَى مَذْهَبِ أَبِيْ حَنِيْفَةَ النُّعْمَانِ للشَّيْخ زَيْنُ الْعَابِدِيْنَ بْنِ إِبْرَاهِيْمِ بْنِ نُجَيْمٍ (926-970هـ) صفحه 407 , قديم طبعه صفحه 224

scroll back to top