User Rating:  / 3
PoorBest 

مولانا یعقوب نانوتوی کی مرزا سے عقیدت و محبت ۔۔ مولانا نے ان علماء کو تکفیر کی دھمکی دے دی جو مرزا کو کافر قرار دینا چاہتے تھے

آلِ دیوبند کی قادیانی محبت کا اندازہ  اس واقعہ سے بخوبی لگایا جا سکتا ہے  جو اشرف علی تھانوی نے بیان کیا ہے کہ

"جس وقت قادیانی کے بارے میں بعض علماء پنجاب  مولانا محمد یعقوب صاحب (صدر مدرس دارلعلوم دیوبند) سے اس کے اقوال نقل کر کے  گفتگو کر رہے تھے تو مولونا ان کی تاویلیں فرما رہے تھے۔ جب انہوں نے زیادہ اصرار کیا تو بطور ظرافت فرمایا کہ ارے میاں جہاں ہندوستان میں پانچ کروڑ مسلمان ہیں ایک وہ(مرزا قادیانی)  بھی سہی، ان علماء نے کہا کہ نہیں حضرت تکفیر ہی میں مصلحت ہے اس وقت مولانا کو جوش ہوا۔ فرمایا جب مسلمان ہی کی تکفیر کرنی ہے تو  اچھا تمھاری ہی کیوں نہ کی جائے جو تم ایک مسلمان کی تکفیر کے درپے ہو رہے ہو۔(ملفوظات حکیم الامت ج۱۹ ص ۹۶)

مولانا یعقوب نانوتوی دیوبندی کی مرزا قایانی حنفی کے ساتھ اس والہانہ محبت اور عقیدت کی مثال نہیں مل سکتی کہ  جب  بعض علماء نے مرزا کو کافر قرار دینے کی بات کی تو مولانا  نے اس  سے صاف انکار کر دیا اور  اس قدر  جوش میں آ  گئے کہ جو لوگ مرزا قادیانی کو کافر  ثابت کرنا چاہتے تھے ان کو ہی دھمکی  دے دی کہ میں تمھیں کافر  قرار دے دوں گا کیونکہ تم ایک مسلمان(مرزا قادیانی) کو کافر قرار دینا چاہتے ہو۔(لعیاذباللہ) 

 

Malfoozat Hakeem ul ummat Jild 19

 

Mirza ke baatoo ke taveel

scroll back to top