User Rating:  / 25
PoorBest 

رضاخانی مذہب میں بالغ شخص کے لیئے علاج کے واسسطے  عورت کا دودھ پینا جائز ہے

غلام رسول سعیدی بریلوی لکھتے ہیں: " صاحب خانیہ اور نہایہ نے عورت کے دودھ سے علاج کو جائز قرار دیا ہے جبکہ یہ علم ہو کہ اس میں شفاء ہے۔"

اور آگے لکھتے ہیں: دوا کے لیئے عورت کا دودھ مرد کی ناک کے راستے سے جسم میں داخل کیا جائے یا مرد کو عورت کا دودھ بطور دوا پلایا جائے تو کوئی حرج نہیں ہے۔"(شرح صحیح مسلم ج2 ص 841

 

)

scroll back to top